قرآن کا پیغام زمانے میں کریں عام

قرآن کا پیغام زمانے میں کریں عام

قرآن کا پیغام زمانے میں کریں عام

مصنف: مستحسن جامی اپریل 2021

 قرآن کا پیغام زمانے میں کریں عام

بڑھ کر کوئی اس سے نہیں ہو سکتا ہے انعام
سینوں میں سجا لیجئے قرآن کا پیغام
قرآن کا پیغام زمانے میں کریں عام
ہونے نہیں دے گا کسی منزل پہ یہ ناکام

ہم نفس کی زنجیر سے آزاد نہ ہوں گے
دنیا میں کسی موڑ پہ بھی شاد نہ ہوں گے
خوش باش کسی طور بھی اجداد نہ ہوں گے
قرآن کے اسباق اگر یاد نہ ہوں گے

جن لوگوں کو معلوم ہے قرآں کی حقیقت
وہ کر نہیں سکتے ہیں کسی طور بغاوت
ایسی کوئی ہو سکتی نہیں اور عبادت
ملتی ہے مقدر سے یہ اللہ کی نعمت

ازبر ہوں اگر خالق و محبوب کے فرمان
سر اپنا اٹھا سکتا نہیں کوئی بھی شیطان
حق بات پہ ڈٹ جائیں تو منزل بھی ہے آسان
کرنا نہ فراموش کبھی حق کا یہ اعلان

قرآن کے پیغام سے ہو جن کو عقیدت
وہ بانٹتے پھرتے ہیں زمانے میں محبت
ہو جاتی ہے شاداب تلاوت سے طبیعت
قرآن بدل دیتا ہے پتھر کی بھی حالت

یک لخت بدل جاتے ہیں ان لوگوں کے حالات
ٹل جاتے ہیں لمحوں میں بھلے جو بھی ہوں خطرات
کرتے نہیں ہیں تنگ کبھی انکو یہ صدمات
جو لوگ طلب کرتے ہیں قرآن سے خیرات

ہو جائیں گے تسخیر سبھی ارض و سماوات
آسان نظر آئیں گی ہر سمت مہمّات
دیکھے گا زمانہ کہ بدل جائیں گے حالات
آ جائے میسر جو ہمیں فقر کی سوغات

روشن ہوئے قرآن کی چاہت سے ہی اسلاف
مقبول زمانے میں ہوا جن کا بھی انصاف
حاصل ہوئے قرآں کی بدولت سبھی اہداف
قرآن کھلا رُوح پہ، سب رستے ہوئے صاف

٭٭٭

سوشل میڈیا پر شِیئر کریں

واپس اوپر